twitter-with-circle youtube-with-circle instagram-with-circle facebook-with-circle

Noha Bibi Fatima 2022 | GHAIB SE FATIMA KI JAAN AAO | Ahmed Raza Nasiri | Ayam e Fatmiyah Noha 2022

 

ll بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم ll

Shahadat Noha Bibi Fatima 2022 | GHAIB SE FATIMA KI JAAN AAO | Ahmed Raza Nasiri | Ayam e Fatmiyah Noha 2022 | 13 Jamadi ul Awal Noha 2022 | 3 Jamadi ul Sani Noha 2022 | Ayam e Fatimiyan 1443 | Shahadat Bibi Fatima Zahra Noha 2022

Video Info:
Title | Ghaib se Fatima (sa) ki jaan aao
Recited and Composed | Ahmed Raza Nasiri 
Poetry | Syeda Naqvi
Chorus | Own Rizvi and team
Translation | Sister Samar e Zehra
Audio | ODS Karachi  
Video | TNA (Ali Arman Baltistani)
Creatives | Shuja Gfx 

●● NOHA LYRICS ● ●

فاطمہ کی ہے یہ صدا مہدی 
کر کے نوحہ علی کی غربت پر 
زخم میرے سبھی شمار کرو 
بیٹھ کر  آج ماں کی تربت پر 
درد دل کے کرو بیاں آؤ


غیب سے فاطمہ کی جاں آؤ 
بین یہ کر ری ہے ماں آؤ


داغ آنکھوں پہ بہتے اشکوں کے 
کمسنی میں سفیدی بالوں کی 
نیل چہرے پہ اک طمانچے کا 
سرخی ہاتھوں پہ تازیانوں کی 
دیکھو غربت کے سب نشاں آو


بنتِ احمد ص کو بعدِ پیغمبر
پرسہ دیتے ہیں شعلے دکھلا کر 
بابِ عصمت سے شور اٹھتا ہے 
 لوگ دیتے ہیں دھمکیاں آ کر 
میرا جلتا ہے آشیاں آؤ


جانِ مادر میری نگاہوں سے 
گھر کا آنگن دھواں دھواں دیکھو
لے گئے ہیں علی ع کو پہنا کر 
کیسے گردن میں ریسماں دیکھو 
صبر و غیرت کے آسماں آؤ


دیکھ پہلو شکستہ تھامے ہوئے
کیسے دربار ماں تمھاری گئ 
میری آنکھوں کے سامنے بیٹا
میرے حق کی سند بھی پھاڑی گئ
ظلم کی سن لو داستاں آؤ


ہاۓ افسوس اب بھی امت کو
 قتلِ محسن پہ کچھ ملال نہیں
میری آغوش سے جو چھینا وہ
 کوئی باغِ فدک کا مال نہیں
َہو مرے منتقم  کہاں آو


لوگ ماریں نہ پھر کہیں پتھر 
قید اب دخترِ حسین نہ ہو
روۓ تنہا نہ شام میں زینب س
واحجابا کا لب پہ بین نہ ہو
میری بیٹی کو دو اماں آؤ